146

یورو فور ٹیکنالوجی آخر ہے کیا؟

پاکستان میں سرکار نے گاڑیوں کے دھوئیں سے پیدا ہونے والی ماحولیاتی آلودگی سے بچنے کے لیے بہترین معیار کا ایندھن درآمد کرنے کا اعلان کیا ۔
وزیراعظم عمران خان نے نیوز کانفرنس میں بتایا کہ ’اب بہتر معیار کا تیل درآمد کیا جائے گا تاکہ ملک میں ماحومیاتی آلودگی کو کم کیا جاسکے۔‘
وزیراعظم نے گاڑیوں کے ایندھن کے معیار کو ’یورو ٹو‘ سے ’یورو فور‘ پر لے جانے کا اعلان کرتے ہوئےکہا کہ ملک میں آئل ریفائنریز کو تین سال تک ’یورو فور‘ ٹیکنالوجی متعارف کروانے کا وقت دے دیا ہے۔
’ یورو فور‘ ٹیکنالوجی آخر کار ہے کیا اور یہ کس طرح ماحولیاتی آلودگی کم کر سکتی ہے؟
نجی ادارے صحت اور ماحولیات کے صدر نعیم قریشی نے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’دنیا بھر کی گاڑیوں میں پیٹرول اور ڈیزل کے استعمال سے ماحولیاتی آلودگی میں اضافہ ہوا ہے۔‘

کیا ہے یہ یورو فور‘ ٹیکنالوجی

ماحولیاتی آلودگی کی بڑی وجہ گاڑیوں سے خارج ہونے والی گیسز ہیں۔ پاکستان میں پبلک ٹرانسپورٹ کی وجہ سے ماحولیاتی آلودگی میں بے پناہ اضافہ ہو رہا ہے جس کی بڑی وجہ گاڑیوں میں استعمال ہونے والا تیل ہے۔‘
جن گاڑیوں میں یورو فور ٹیکنالوجی کا ایندھن استعمال ہوتا ہے ان سے کاربن ڈائی آکسائیڈ، کاربن مونو آکسائیڈ اور سلفر کی کم مقدار فضا میں خارج ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں