108

آٹے کی قیمت میں اضافے پر وزیر اعلیٰ پنجاب حرکت میں آگئے

آٹے کی قیمت میں اضافے پر وزیر اعلیٰ پنجاب حرکت میں آگئے

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بعض شہروں میں آٹے کی قیمتوں میں بغیر نوٹس اضافے پر میڈیا پر ہونے والی خبروں کا سخت نوٹس لیا ہے. وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے آٹے کی قیمت میں استحکام کے لئے ضروری اقدامات اٹھانے کاحکم دے دیا ہے. فرائض سے غفلت اور بے ضابطگیوں میں ملوث محکمہ خوراک کے افسران کوفوری طورپر عہدوں سے برطرف کرنے کا حکم دیدیا ہے. اس حوالے سے وزیراعلیٰ‌پنجاب
عثمان بزدار نے کہا ہے کہ آٹے کی قیمت بغیر نوٹس کے اضافہ پر کسی صورت برداشت نہیں کروں گا۔ عوام کو آٹے کی مقرر کردہ قیمت پردستیابی یقینی بنائی جائے گی۔ گندم اورآٹے کی سپلائی اور ڈیمانڈ کی سختی سے مانیٹرنگ کی جائے۔ سرکاری گندم کاآٹا اوپن مارکیٹ میں فروخت کرنے والی فیکٹریوں کو بند کیا جائے گا۔ محکمہ خوراک اورانتظامی افسران آٹے کی دستیابی کو یقینی بنائیں۔ چکی مالکان کو آٹے کی قیمت میں اضافے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ آٹے کی قیمت میں بلاجواز اضافہ کرنیوالوں کیخلاف قانون حرکت میں آئے گا۔ صوبے کے خارجی راستوں پر مانیٹرنگ کے نظام کو مزیدسخت سے سخت کیا جائے۔ آٹے کے قیمتوں میں بلاجواز اضافے کے حوالے سے کسی سے کوئی رعایت نہیں ہوگی۔ صوبائی وزیر خوراک خود فیلڈ میں جا کرآٹے کی دستیابی کو یقینی بنائیں۔ پنجاب میں آٹے کی قیمت میں اضافہ نہیں ہونے دیا جائے گا۔ محکمہ خوراک روزانہ کی بنیادپرکیے جانے والے اقدامات کی رپورٹ وزیراعلیٰ آفس بھجوائے۔ مجھے آٹے کی قیمتوں میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں ہو گا۔ محکمہ خوراک ایکشن لے اورآٹے کی دستیابی کو برقرار رکھے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکے سخت احکامات پر محکمہ خوراک نےصوبہ بھر میں کریک ڈاؤن شرع کیا ہے. 376فلورملوں کیخلاف کارروائی،9کروڑ 6لاکھ روپے جرمانہ،فرائض سے غفلت برتنے پر محکمہ خوراک کے افسروں کیخلاف ایکشن،15فلور ملوں کے لائسنس معطل کردیئے گئے۔180فلور ملوں کا گندم کا کوٹہ معطل کردیا گیا. وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی ہدایت پر فرائض سے غفلت برتنے اوربے ضابطگیوں میں ملوث محکمہ خوراک کے چار افسران کوعہدوں سے فارغ کر دیاگیا۔ اس حوالے سے ڈسٹرکٹ فود کنٹرولرگوجرانوالہ روحیل بٹ اور ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر سیالکوٹ نصراللہ خان ندیم کو معطل کردیا گیا ہے،ڈپٹی ڈائریکٹر محکمہ خوراک فیصل آبادکامران بشیر اورڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر وہاڑی صغیر احمد کو بھی عہدے سے ہٹا دیاگیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی ہدایت پر پنجاب کے مختلف شہروں میں آٹے کی سپلائی کو یقینی بنانے کیلئے 126سیل پوائنٹس قائم کیے گئے ہیں. لاہورڈویژن میں 21سیل پوائنٹس پر ٹرکوں کے ذریعے ایکس مل ریٹ پر آٹے کی سپلائی شروع کردی .راولپنڈی ڈویژن میں 55سیل پوائنٹس گوجرانوالہ ڈویژن میں 9سیل پوائنٹس بہاولپور ڈویژن میں 17سیل پوائنٹس سیالکوٹ ضلع میں 24سیل پوائنٹس پر ٹرکوں کے ذریعے آٹے کی فراہمی شروع کردی گئی ہے. وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت وزیراعلیٰ آفس میں ہنگامی اجلاس طلب کیا گیا. اجلاس میں صوبے میں آٹے کی ڈیمانڈ و سپلائی اورقیمتوں کے حوالے سے جائزہ لیاگیا۔ صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری بہاولپور سے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔ چیف سیکرٹری،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ، سیکرٹری خوراک، ڈائریکٹر فوڈ، سیکرٹری اطلاعات نے اجلاس میں شرکت کی. وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے محکمہ خوراک میں مانیٹرنگ سیل قائم کرنے کی ہدایت جاری کی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں